اہم خبریںپاکستانسیاست

پنجاب میں نئی پارٹی کی باز گشت، ناراض رہنماوں سے ملاقاتیں

پی ٹی آئی کے باغی ارکان جہانگیر ترین، عبدالعلیم خان اور چوہدری سرور گروپ کے لوگوں کو نئی پارٹی میں کلیدی عہدے دیے جائیں گے۔

کریز نیوز۔ پاکستان تحریک انصاف کا پنجاب میں زور توڑنے کے لیے بااثر سیاسی شخصیات متحرک ہوگئی ہیں اور اس سلسلے میں پی ٹی آئی کے سابق رہنماؤں کی قیادت میں ایک نئی پارٹی کے قیام کی تیاریاں تیزی سے جاری ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نئی جماعت کی تشکیل کے لئے رابطوں اور ملاقاتوں کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے جبکہ سینٹرل اور جنوبی پنجاب کے اہم خاندانوں کے چشم و چراغ نئی پارٹی کا حصہ ہوں گے۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ عام انتخابات سے قبل اس جماعت میں پی ٹی آئی اور مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی اور سابق ارکان شمولیت اختیار کریں گے، اس حوالے سے پی ٹی آئی کے باغی ارکان جہانگیر ترین، عبدالعلیم خاں اور چوہدری سرور گروپ کے لوگوں کو نئی پارٹی میں کلیدی عہدے دیے جائیں گے۔

نئی جماعت کی قیادت پی ٹی آئی پنجاب کی سابق اہم شخصیت کرے گی، نئی جماعت عام انتخابات میں اپنے علیحدہ انتخابی نشان کے ساتھ میدان میں اترے گی، آئندہ عام انتخابات میں نئی جماعت پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے ساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ کے تحت انتخابات میں حصہ لے گی۔ یہ نئی جماعت پنجاب میں پی ٹی آئی کے مضبوط حلقوں میں اپنے امیدوار کھڑے کرے گی۔ پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے ساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ کے بعد سنٹرل اور جنوبی پنجاب میں نئی جماعت کو ٹارگٹ دیا جائے گا کہ وہ پنجاب اسمبلی کی 40 سے 45 نشستیں حاصل کرے۔ فیصلہ سازوں کا کہنا ہے کہ یہ نئی جماعت قومی اسمبلی کی کم از کم 15 سے 20 نشستیں جیتے، نئی جماعت کی جیت کی صورت میں اگلا وزیراعلی پنجاب اسی جماعت سے ہونے کے قوی امکانات ہیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button