پاکستان

جنرل باجوہ رخصت، سید عاصم منیر نے فوج کی کمان سنبھال لی

اپنے الوداعی خطاب میں جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ میرے چھ سالہ دور میں اس فوج نے ہمیشہ لبیک کہا، میں نے پسینہ مانگا تو خون دیا، لائن آف کنٹرول کی صورتحال ہو، دہشتگردی کے چیلنجز، سیاچن سے لے کر تھر کے صحراوں کی حفاظت، قدرتی آفات ہوں ہر موقع پر اس فوج نے ہمیشہ لبیک کہا۔

آج باقاعدہ طور پر جنرل عاصم منیر  نے پاک فوج کی کمان سنبھال لی۔ جی ایچ کیو میں چینج آف کمانڈ کی تقریب کے دوران سبکدوش ہونے والے آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے کمان کی چھڑی جنرل عاصم منیر کے حوالے کر دی اور یوں عاصم منیر پاک فوج کے 17 ویں سپہ سالار بن گئے۔ جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں منعقدہ پروقار تقریب میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور جنرل عاصم منیر نے یادگار شہدا پر حاضری دی۔ جس کے بعد پاک فوج کی مختلف رجمنٹس سے تعلق رکھنے والے دستوں نے پریڈ میں شرکت کی، اس دوران ملی نغموں نے شرکا کے جوش و ولولے میں اضافہ کردیا۔

چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل ساحر شمشاد مرزا کے ساتھ ساتھ پاک فضائیہ کے سربراہ ظہیر احمد بابر بھی تقریب میں شریک تھے۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے جنرل عاصم منیر کے ہمراہ گارڈ آف آنر کا معائنہ کرنے کے بعد تقریب سے خطاب کیا۔ ریٹائر ہونے والے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے آخری خطاب میں کہا کہ میرے چھ سالہ دور میں اس فوج نے ہمیشہ لبیک کہا، میں نے پسینہ مانگا تو خون دیا، لائن آف کنٹرول کی صورتحال ہو، دہشتگردی کے چیلنجز، سیاچن سے لے کر تھر کے صحراوں کی حفاظت، قدرتی آفات ہوں ہر موقع پر اس فوج نے ہمیشہ لبیک کہا۔

جی ایچ کیو میں چینج آف کمان کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مجھ امید ہے کہ آنے والے وقتوں میں جنرل عاصم منیر کی قیادت میں یہ فوج اس سے بڑھ کر ملک کی خدمت کریگی۔ ان کا کہنا تھا کہ میں آج ریٹائرڈ ہو رہا ہوں، اور میں عنقریب گمنامی میں چلا جاونگا لیکن میرا روحانی رابطہ فوج سے ہمیشہ قائم رہے گا، فوج کی کامیابی پر خوشی ہوگی اور مشکل وقت میں میری دعائیں ساتھ ہوں گی۔ انہوں نے نئے آرمی چیف جنرل عاصم منیر کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ امید کرتا ہوں کہ ان کی پروموشن ملک اور فوج کیلئے بہتر ہوگی، جنرل عاصم منیر اعلیٰ اصولوں پر کاربند رہنے والی شخصیت اور حافظ قرآن ہیں، ان کی تعیناتی ملک و فوج کیلئے بہتر ثابت ہوگی۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button